پاکستان کا اعزاز…. ایک مولوی سائنسدان

اسلام آباد: پاکستانی سائنسدان دنیا بھر میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے لگے، ڈاکٹر مولوی مبشر حسین رحمانی کوکمپیوٹر سائنس کے شعبے میں دنیا کے بہترین1 فیصد محققین میں شامل کرلیا گیا۔

سی آئی ٹی کے شعبہ کمپیوٹر سائنس میں درس دینے والے ماہر تعلیم ڈاکٹر مبشر حسین رحمانی مہران یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی سے کمپیوٹر سسٹم انجینئرنگ کے شعبے سے فارغ التحصیل ہیں۔

ڈاکٹر مبشر حسین رحمانی نے 100 سے زیادہ مضامین لکھے جن میں سے 12کلیریویٹ کے انتہائی حوالہ جات والے مضامین شامل ہیں، ان کا کام وائرلیس نیٹ ورکس، بلاک چِین، علمی ریڈیو نیٹ ورکس اور سافٹ ویئر سے متعین نیٹ ورکس پر مرکوز ہے۔

کارک انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے پروفیسر ڈاکٹر مبشر حسین کے تحقیقی کام کو بین الاقوامی سطح پر تسلیم کرنے کے باعث متعدد ایوارڈز بھی مل چکے ہیں۔
کلریویٹ انالٹیکس کی مرتب کردہ تازہ ترین رپورٹ میں منتخب کردہ فیلڈ میں نمایاں اثر و رسوخ کے ساتھ روشنی ڈالی گئی ہے۔

اس رپورٹ میں محققین کو دنیا کے سب سے اہم چیلنجوں پر کام کرنے والے شارٹ لسٹس کی فہرست جاری کی گئی ہے جنہوں نے 26 نوبل انعام یافتہ افراد سمیت21 شعبوں میں 6400 محققین بھی شامل ہیں۔

ڈاکٹر مبشر حسین رحمانی اسسٹنٹ لیکچرار کی حیثیت سے 5سال تک کوماسٹس یونیورسٹی اسلام آباد سے وابستہ رہے ہیں جبکہ اس وقت کارک انسٹیٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے شعبہ کمپیوٹر سائنس میں پڑھا رہے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں